tajweed

علم تجوید کی اہمیت

اﷲ تعالی نے اپنے بندوں کی رشد وہدایت کے لئے قراٰن مجید نازل فرمایا اور قراٰن کریم کے پڑھنے ‘ سننے اور دیکھنے کو عبادت قراردیا۔ قراٰن کریم کی تلاوت ایمان کی تازگی‘ دل کی پاکیزگی اور روح کی بالیدگی کا بہترین وسیلہ ہے ۔ جب کو ئی شخص قراٰن مجید کی تلاوت کرتا ہے تو اسے معزز فرشتوں کا ساتھ نصیب ہوتا ہے گویا وہ اللہ تعالی سے ہمکلامی کا شرف حاصل کرتا ہے، قراٰن پاک کا ایک حرف  تلاوت کرنے پر دس نیکیوں کا ثواب لکھا جاتا ہے۔

قراٰن وحدیث میں جہاں تلاوت کے فضائل مذکور ہیں وہیں تلاوت کرتے وقت تلاوت کے قواعد وآداب کا لحاظ رکھنے کی بڑی تاکید آئی ہے اﷲ تعالی کا ارشاد ہے:’’اَلَّذِیْنَ آتَیْنَاہُمُ الْـکِتَابَ یَتْلُوْنَہٗ حَقَّ تِلاوَتِہٖ‘‘جن لوگوں کو ہم نے کتاب (قراٰن ) عطاء کی ہے وہ اسکی ایسی تلاوت کرتے ہیں جیسا اسکی  تلاوت کا حق ہے ۔’’ وَ رَتِّلِ الْقُرْآنَ تَرْتِیْلا ‘‘ قراٰن مجید کو ٹھیر ٹھیر کر (تجوید کے ساتھ ) پڑھو۔   حضور اکرم ﷺ ارشاد فرماتے ہیں: ’’رُبَّ تَالِيْ الْقُرْآنِ وَالْقُرْآنُ یَلْعَنُہٗ ‘‘قراٰن کی تلاوت کرنے والے بعض ایسے لوگ ہوتے ہیں کہ ان پر  قراٰن لعنت کرتا ہے ۔اسی لئے ارشاد ہے’’زَیِّنُوْا الْقُرْآنَ بِأَصْوَاتِکُمْ  ‘‘ قر اٰن کی تلاوت کو اپنی اچھی آوازوں سے زینت دو ۔

الغرض قراٰن مجید کو تجوید کے ساتھ پڑھنا اور اسکے آداب کی رعایت کرنا ضروری ہے ، تجوید سے نا واقفیت کی صورت میں قاری بجائے ثواب کے گناہ کا مستحق ہو جاتا ہے ۔

٭٭٭