madina

نام و نسب

نبی اکرم ﷺ کا اسم مبارک:

آپ ﷺ کے دادا عبدالمطلب نے آپ کانام محمد رکھا آپ کی والدہ نے آپ کا نام احمد رکھا۔

حضور ﷺ کا نسب مبارک:

محمد بن عبداللہ بن عبدالمطلب بن ہاشم بن عبدمناف بن قصی بن کلاب بن مرۃ بن کعب بن لوی بن غالب بن فہر بن مالک بن النضربن کنانۃ بن خزیمۃ بن مدرکۃ بن الیاس بن مضر بن نزار بن معد بن عدنان سے اسماعیل بن ابراہیم الخلیل علیہما السلام تک۔

حضور ﷺ کے القاب مبارکہ:

حضور ﷺ کے القاب مبارکہ تو بہت زیادہ ہے، یہاں چند ذکر کیئے جاتے ہیں:

رحمۃ للعالمین، شفیع المذنبین، سید الانبیاء، سیدالاولین و الآخرین، نبی الرحمہ، نبی الملاحم، حبیب اللہ، النبی المختار۔

انبیاء کرام کی بشارتیں:

حضرت سیدنا آ دم علیہ السلام سے لیکر حضرت سیدنا عیسیٰ علیہ السلام تک ہر ایک نے آپ  ﷺ کی جلوہ افروزی وتشریف آوری کی بشارتیں اپنی اپنی امتوں کو دیا کرتے تھے اور یہ مثردہ سنایا کرتے تھے کہ خاتم الانبیاء تشریف کانے والے ہیں جن کا اسم مبارک احمد ہوگا۔

کتب سابقہ میں حضور ﷺکا ذکر جمیل:

تورات وانجیل میں حضورپاک ﷺ اور آپکے اوصاف وکمالات کا ذکر مبارک ہے چنانچہ تورات میں حضورپاک ﷺکے ذکر کے متعلق جب پوچھاگیا تو آپ نے فرمایا بے شک تورات میں حضورپاک ﷺکی وہی صفات بیان کی گئی جو قرآن مجید میں ہیں پھر آپ نے تورات کی آیتیں پڑھ کی سنائیں جسکا معنی یہ ہے ۔اے نبی ہم نے بھیجا ہے آپ کو گواہ بناکر خو شخبری دینے والا،ہر وقت ڈرانے والا امتیوں کے لئے پناہ کی جگہ آپ میرے بندے اور  رسول ہیں آپ نہ سخت دل ہیں اور نہ بازاروں میں شورمچانے والے ۔

حضور ﷺ کی ولادت مبارک:

حضور ﷺ کی ولادت مبارکہ 12ربیع الاول عام الفیل اپریل 571عیسوی پیر کے دن  صبح صادق کے وقت ہوئی ۔

آپ ﷺ کے ولادت کے وقت آپ کی والدہ حضرت آمنہ رضی اللہ عنہا سے ایک نور نکلا جس سے آپ ؓ  کو شام کے محلات نظر آنے لگے۔

ولادت شریفہ کے دن کسی کے محل میں زلزلہ آیا اور فارس کا ہزار سال سے روشن آتش کدہ بجھ گیا اور مکہ میں موجود سارے بت اوندھے منہ گرگئے۔

مکہ میں عرصہ دراز سے جاری قحط ختم ہوگیا اور زمین ہریالی سے بھر گئی۔

ساری کائنات انسان، حیوان،درخت، پتھر، جن اور ملائکہ خوشیاں منانے لگے ، آپ ﷺ کے میلاد کے موقعہ پر صرف شیطانوں کا سردار ابلیں خوشی نہیں منایا۔

حضور ﷺ کے والدین کریمین:

آپ ﷺ کے والد گرامی کانام عبداللہ ہے جنکے  والد کا نام عبدالمطلب اور والدہ کا نام فاطمہ ہے، حضرت عبداللہ رضی اللہ عنہ کی وفات حضور  ﷺ کی ولادت سے چند ماہ قبل ہوئی ۔

حضور ﷺ کی والدہ کریمہ کا نام آمنہ ہے جنکے والد کانام وہب اور والدہ کانام بَرّہ ہے، حضرت آمنہ رضی اللہ عنہا کی وفات اس وقت ہوئی جبکہ آپ ﷺ کی عمر شریف چھ برس تھی۔

٭٭٭